world cup kit

ورلڈ کپ 2023 کیلئے قومی ٹیم کی کٹ کی رونمائی کردی گئی

ورلڈ کپ 2023 کیلئے قومی ٹیم کی کٹ کی رونمائی کردی گئی
ویب ڈیسک 28 اگست 2023
ذکا اشرف نے کہا کہ اس بار قومی ٹیم کے یونیفارم پر سبز پرچم اور کرکٹ اسٹار بھی ہے اور یہ ورلڈ کپ کی کامیابی کا سبب بنے گا
لاہور میں ورلڈ کپ کے لیے قومی ٹیم کی کٹ کی رونمائی تقریب سے خطاب کرتے ہوئے پاکستان کرکٹ بورڈ کی عبوری انتظامی کمیٹی کے چیئرمین ذکا اشرف نے کہا کہ آج خاص لمحہ ہے جب ہم ورلڈ کپ کے لیے پاکستانی ٹیم کے یونیفارم کی رونمائی کر رہے ہیں۔
پاکستان کرکٹ بورڈ (پی سی بی) کی عبوری انتظامی کمیٹی کے چیئرمین ذکا اشرف نے ورلڈ کپ 2023 کے لیے پاکستانی ٹیم کی کٹ کی رونمائی کرتے ہوئے کہا ہے کہ ہماری ٹیم متحد ہوکر آگے بڑھ رہی ہے، توقع ہے کہ ورلڈ کپ میں کامیابی ہوگی۔
ذکا اشرف نے کہا کہ اس بار قومی ٹیم کے یونیفارم پر سبز پرچم اور کرکٹ اسٹار بھی ہے اور یہ ورلڈ کپ کی کامیابی کا سبب بنے گا۔
ذکا اشرف نے کہا کہ ہماری ٹیم ون ڈے رینکنگ میں پہلے ہی چیمپیئن بن گئی ہے، یہ ہماری ٹیم کی ہمت اور کوشش ہے کہ جس طرح وہ آگے بڑھے ہیں اور پوری قوم کی دعائیں اپنی ٹیم کے ساتھ ہیں۔
انہوں نے کہا کہ جس طرح ہماری ٹھیل محنت کر رہی ہے، توقع ہے کہ قومی ٹیم ورلڈ کپ 2023 میں اچھی کارکردگی کا مظاہرہ کرے گی، انشااللہ ایشیا اور ورلڈ کپ میں ہماری کامیابی ہوگی۔
بعدازاں ایک سوال کے جواب میں ذکا اشرف نے کہا کہ ہم سری لنکا میں ٹیم سے ملے تھے جہاں محسوس ہوا کہ ہماری ٹیم متحد ہوکر آگے بڑھ رہی ہے۔
انہوں نے کہا کہ بورڈ اور ٹیم کی طرف سے پوری تیاری کی جارہی ہے، وہ دن دور نہیں جب ٹیم پاکستان کے لیے اعزاز لائے گی، مزید کہا کہ مجھے بورڈ میں آئے مشکل سے دو ماہ ہوئے ہیں، ہم سے جو ہوگا ملک لیے کریں گے۔ بورڈ آف کنٹرول فار کرکٹ ان انڈیا (بی سی سی آئی) کی جانب سے ابتدائی طور پر ڈرافٹ کردہ اس شیڈول میں روایتی حریف پاکستان اور بھارت کے درمیان میچ 15 اکتوبر کو رکھا گیا ہے۔
اس شیڈول کو انٹرنیشنل کرکٹ کونسل (آئی سی سی) کو بھیجا گیا ہے اور حتمی شکل دینے سے قبل ایونٹ میں شرکت کرنے والے تمام رکن ممالک کو بھیجا جائے گا۔اس ڈرافٹ میں سیمی فائنل مقابلوں کے مقام کا فیصلہ ابھی نہیں کیا گیا جو ممکنہ طور پر 15 اور 16 نومبر کو کھیلا جائے گا جبکہ فائنل کی میزبانی 19 نومبر کو احمد آباد کا ایک لاکھ سے زائد گنجائش کا اسٹیڈیم کرے گا۔
بھارت ایونٹ میں اپنے تمام راؤنڈ میچز 9 مقامات پر کھیلے گا جبکہ لیگ مرحلے میں پاکستان کے میچز پانچ مقامات پر کھیلے جائیں گے۔پاکستان کی ٹیم 6 اور 12 اکتوبر کو کوالیفائر ٹیموں کا احمدآباد میں سامنا کرے گی جس کے بعد 20 اکتوبر کو بنگلورو میں آسٹریلیا، چنئی میں 23 اکتوبر کو افغانستان اور 27 اکتوبر کو جنوبی افریقہ، بنگلہ دیش سے 21 اکتوبر کو کولکتہ، 5 نومبر کو بنگلورو میں نیوزی لینڈ جبکہ 12 نومبر کو کولکتہ میں انگلینڈ کے مدمقابل ہوگی جو لیگ مرحلے کا آخری میچ بھی ہوگا۔
اس کے علاوہ ایونٹ میں کھیلے جانے والے دیگر اہم میچز میں نیوزی لینڈ اور آسٹریلیا کی ٹیمیں 29 اکتوبر کو دھرمشالا، آسٹریلیا اور انگلینڈ 4 نومبر کو احمد آباد جبکہ نیوزی لینڈ اور جنوبی افریقہ یکم نومبر کو پونے میں آمنے سامنے ہوں گے۔

ورلڈ کپ کے آغاز میں چار ماہ سے بھی کم کا عرصہ رہ گیا ہے لیکن اس کے باوجود حتمی شیڈول کا اعلان اب تک نہیں کیا گیا حالانکہ 2019 اور 2015 کے ورلڈ کپ شیڈول کا اعلان ایک سال قبل ہی کردیا گیا تھا۔

اس خبر پر اپنی رائے کا اظہار کریں

اپنا تبصرہ بھیجیں