کویت میں عجیب و غریب واقعہ، بھارتی ڈرائیور نے اپنے کفیل پر جادو کر دیا

ایک عجیب و غریب کیس میں مجرمانہ تفتیش کے حکام ایک ہندوستانی ڈرائیور کو پکڑنے میں کامیاب ہو گئے جو اپنے کفیل جو کہ ایک تاجر ہے کو کنٹرول کرنے اور اس کی رقم ضبط کرنے میں کامیاب ہو گیا۔ بھارتی شہری اپنے ملک کے ایک جادوگر کو اپنے کفیل کو کنٹرول کرنے کی غرض سے کویت لے کر آیا اور اپنے خرچے پر ایک لگژری اپارٹمنٹ میں رہائش بھی دی۔

ایک سیکورٹی ذرائع کی طرف سے بتائی گئی تفصیلات میں فوجداری تفتیشی افسران کو دو شہریوں کی طرف سے ایک خصوصی شکایت موصول ہوئی جس کے دوران انہوں نے بتایا کہ ان کے بھائی (جس کا نام ظاہر نہیں کیا گیا) جو کہ ایک تاجر ہے کے رویے میں حال ہی میں بڑی تبدیلی آئی ہے اور یہ کہ اس نے کچھ عجیب و غریب حرکتیں کی ہیں اور ان کے ہندوستانی ڈرائیور جس کا نام راجو ہے کے حکم کی تعمیل کرتا ہے۔

ذرائع نے مزید کہا کہ شکایت میں یہ بھی شامل تھا کہ ڈرائیور ان کے بھائی کی رقم کا استحصال اور لوٹ مار کر رہا تھا اور اگرچہ ڈرائیور کی تنخواہ 150 دینار ماہانہ تھی لیکن وہ انتہائی امیر لگ رہا تھا اور اس کا معیار زندگی بدل گیا تھا حتیٰ کہ وہ کویت سے اپنے ملک صرف ایک ہفتے کی چھٹی گزارنے کے لئے گیا اور کویت سے ایک بڑی ایئر لائن کی بزنس کلاس میں سفر کرنے کا انتخاب کیا۔

ذرائع نے مزید کہا کہ شکایت میں یہ بھی شامل تھا کہ ڈرائیور کے پہننے والے کپڑوں اور جوتوں کا معیار بلند ترین سطح پر پہنچ چکا تھا اور یہ کہ اس نے ان کے بے بس بھائی کی درخواستوں کو مسترد کیے بغیر ان کی بہت سی رقم ہتھیا لی ہے۔

ذرائع نے وضاحت کی کہ شکایت اور معلومات کی بنیاد پر جاسوسوں نے ڈرائیور کی نگرانی شروع کی اور اس کی نگرانی کے بعد اس بات کی تصدیق کی گئی کہ اس کے تمام حالات مواد اور معیار زندگی کی سطح اس حد تک تبدیل ہو چکے ہیں کہ وہاں تک کوئی ڈرائیور نہیں پہنچ سکتا اور یہ پتہ چلا کہ وہ دراصل اپنے کفیل کا کسی مشکوک طریقے اور کسی چیز سے استحصال کر رہا ہے اور یہ کہ اس کا کفیل ایک کاروباری شخص ہے جس سے اس کے لیے شکوک پیدا ہوتے ہیں۔

ذرائع نے اشارہ کیا کہ ڈرائیور اور اس کے ڈیلرز کی تمام حرکات و سکنات جاننے کے بعد اس کے قریب ترین شخص جو کہ ایک اور بھارتی شہری ہے کو پکڑ لیا گیا۔ تفتیش میں انکشاف ہوا کہ وہ اپنے ملک میں بہت بڑا سفاک اور جادو ٹونے کرتا تھا جسے یہ ڈرائیور بے بس تاجر کی کفالت پر ہی کویت میں لایا اور اسے ایک لگژری اپارٹمنٹ میں رکھا۔

تحقیقات سے مزید معلوم ہوا کہ جادو ٹونا کرنے والے نے تاجر پر مزید کنٹرول حاصل کرنے اور اس کی رقم ہتھیانے کے لیے کفیل تاجر کے گھر کے سامنے ہی اپنے طلسم کا استعمال کیا۔

ملزم ڈرائیور نے اعتراف کیا کہ اس نے کچھ عرصہ قبل اس کے کفیل کی رقم ضبط کی تھی اور اگر گھر میں کوئی بھی فیصلہ لینا ہو تو وہی گھر میں ہر چیز کا فیصلہ کرتا ہے۔

ذرائع نے کہا کہ تاجر جاسوسوں کے سامنے گر پڑا اور التجائیں کرتا رہا کہ “یہ برسوں سے میرا ڈرائیور ہے، میرے بچوں جیسا ہی ہے اور میں اس سے کچھ نہیں چاہتا” جو کہ اس بات کا اشارہ ہے کہ وہ ابھی تک جادو کے حصار میں ہے۔ مزید تفتیش اور قانونی اقدامات کے لئے ملزمان کو تفتیشی حکام کے حوالے کر دیا گیا۔

بحوالہ: کویت اردو نیوز

اپنا تبصرہ بھیجیں