کویت میں کن کن سرگرمیوں پر پابندی ہو گی وزراء کونسل کا فیصلہ جاری

 سرکاری کام کی جگہوں پر ملازمین کی فیصد کا تعین 50 فیصد سے زیادہ نہ ہو: کویت وزراء کونسل

تفصیلات کے مطابق کویت وزراء کی کونسل نے 12 جنوری بروز بدھ سے شروع ہونے والے سرکاری کام کی جگہوں پر ملازمین کی تعداد کو 50 فیصد سے زیادہ تک محدود کرنے کا فیصلہ کیا اور اس فیصلے پر عمل درآمد کے لیے سول سروس بیورو کو تفویض کردیا ہے۔ کابینہ نے پرائیویٹ سیکٹر پر زور دیا کہ وہ کاروبار کے انعقاد کے لیے کام کی جگہوں پر کارکنوں کی تعداد کو کم سے کم حد تک کم کرے جبکہ نرسریوں اور چلڈرن کلبوں میں ورکرز کو کورونا وائرس کے خلاف حفاظتی ٹیکوں کی مکمل ضرورت پر زور دیا، ساتھ ہی اس بات کو یقینی بنانے کے لیے وہ صحت کی ضروریات کے اطلاق پر عمل کرتے ہیں۔ کونسل نے اشارہ کیا کہ

اندرونی میٹنگز، کانفرنسز اور کورسز کا انعقاد 12 جنوری 2022 بروز بدھ سے ریموٹ کمیونیکیشن تک محدود ہے جس کا اطلاق اگلے نوٹس تک جاری رہے گا۔ انہوں نے نشاندہی کی کہ صحت اور احتیاطی تدابیر کو نافذ کرتے ہوئے پبلک ٹرانسپورٹ میں مسافروں کی تعداد 50 فیصد سے زیادہ نہیں ہونی چاہیے اس فیصلے کا

اطلاق 12 جنوری 2022 بروز بدھ سے اگلے نوٹس تک جاری رہے گا۔ انہوں نے نشاندہی کی کہ جنرل سپورٹس اتھارٹی کو یہ کام سونپا گیا ہے کہ وہ کھیلوں کی سرگرمیوں میں شرکت کرنے والی عوام کو کورونا وائرس کے خلاف حفاظتی ٹیکوں کو مکمل کرنے اور صحت کی ضروریات پر عمل کرنے کی ضرورت پر زور دیں۔ سیلونز، حجام کی دکانوں اور ہیلتھ کلبوں میں کارکنوں اور زائرین پر زور دیا گیا کہ کورونا وائرس کے خلاف حفاظتی ٹیکوں کو مکمل کرنے کی ضرورت ہے۔ تمام سرکاری اداروں کو سرکلر جاری کیا گیا ہے جو انٹرنیٹ کے ذریعے ان خدمات کو لاگو کرکے زائرین کو خدمات فراہم کریں گی۔

حکومتی ذرائع نے کیا کہ کابینہ کے اجلاس کے فیصلوں میں جو آج وزارتی کمیٹی برائے کورونا ایمرجنسی کی سفارشات پر بحث کر رہی ہے میں اب تک کوئی بھی سرگرمی بند کرنا اور نہ ہی فاصلاتی تعلیم کو اپنانا شامل ہے۔

بحوالہ: کویت اردو نیوز

اپنا تبصرہ بھیجیں