کویتی شہریوں اور غیر ملکیوں کو فی الحال کویت نہ چھوڑنے کا مشورہ

کویتی اور غیر ملکیوں کو فی الحال کویت نہ چھوڑنے کا مشورہ دیا جاتا ہے: ذرائع روزنامہ الانباء

تفصیلات کے مطابق روزنامہ الانباء کے ایک اعلیٰ سطحی ذرائع نے ایک خصوصی بیان میں کویتی شہریوں اور غیر ملکیوں سے درخواست کی ہے کہ وہ فی الوقت کویت چھوڑ کر نہ جائیں کیونکہ نئے میوٹینٹ کورونا وائرس اومی کرون سے متعلق پیش رفت کے بارے میں کوئی تصدیق شدہ سرکاری معلومات نہیں ہیں کہ ممالک میں کس حد تک پھیلاؤ ہے۔ مقامی اور بین الاقوامی سطح پر سخت احتیاطی تدابیر اختیار کرنا مکمل طور پر وائرس کے پھیلاؤ پر منحصر ہے۔ حکومت صورتحال پر گہری نظر رکھے ہوئے ہے اور ہر ایک کو صحت سے متعلق احتیاطی تدابیر پر عمل کرنے کو کہا ہے۔ اس سے قبل کویت کی وزارت خارجہ نے بھی کویتی شہریوں سے مطالبہ کیا تھا کہ وہ 27 نومبر کی کابینہ کے فیصلے کی پابندی کریں اور کورونا وائرس کے نئے وائرس سے متعلق حفاظتی اقدامات کریں۔ اپنے بیان میں وزارت نے کویتی شہریوں سے کہا کہ وہ سفر سے گریز کریں جب تک کہ ضروری نہ ہو کیونکہ ممالک اومیکرون وائرس کے پھیلاؤ کے خلاف متحرک ہیں اور سخت اقدامات کر رہے ہیں۔

دریں اثناء کویت کی وزارت صحت نے کہا ہے کہ 24 گھنٹوں کے دوران 35 افراد میں نوول کورونا وائرس کا ٹیسٹ مثبت آیا ہے جس سے مجموعی تعداد 413,362 ہو گئی ہے۔ وزارت کے ترجمان ڈاکٹر عبداللہ السناد نے کویت کی مقامی نیوز ایجنسی کونا کو بتایا کہ اس عرصے میں کوئی اموات درج نہیں کی گئیں جبکہ اموات کی تعداد 2,465 ہے۔ انہوں نے تصدیق کی کہ 17 شفایابی کے کیس درج کئے گئے جس سے شفایابی کی مجموعی تعداد بڑھ کر 410,627 ہوگئی ہے۔ ہسپتال کے وارڈوں میں سات دیگر کے علاوہ 270 مریض زیر علاج ہیں۔ انہوں نے کہا کہ کسی بھی کوویڈ 19 آئی سی یو میں کوئی کیس نہیں ہے۔ اسی مدت کے دوران کئے گئے طبی سویب ٹیسٹ 19,762 تک پہنچ گئے جس سے مجموعی تعداد 5,330,503 ہوگئی۔

بحوالہ:  کویت اردو نیوز

اپنا تبصرہ بھیجیں