کویت ائیرپورٹ پر پروازوں کا مکمل آپریشن تاخیر کا شکار

کویت ایئر پورٹ یکم نومبر سے مکمل طور پر آپریشنل ہو گا۔

تفصیلات کے مطابق کابینہ کے معمولات زندگی کی واپسی کے فیصلے پر عمل درآمد کرتے ہوئے کویت بین الاقوامی ہوائی اڈہ آج اتوار سے پروازوں کا مکمل آپریشن “آپریٹنگ کوٹے” کے بغیر شروع کر چکا ہے۔ ڈپٹی ڈائریکٹر جنرل برائے ایئر پورٹ افیئرز ، اسسٹنٹ انڈر سیکرٹری ، انجینئر صالح الفداغی نے روزنامہ الانباء کو دیے گئے ایک خصوصی بیان میں کہا کہ جنرل ڈائریکٹوریٹ آف سول ایوی ایشن ہوائی اڈے کو مکمل طور پر چلانے کے لیے تیار ہے کیونکہ ہوائی اڈے کی عمارتوں میں سروس فراہم کرنے والوں اور آپریٹرز کے ساتھ جمعرات اور جمعہ کو ہونے والی دو ملاقاتوں میں انہیں مسافروں کی تعداد بڑھانے کے لیے تفویض کیا گیا تھا۔ ایم الفداغی نے بیان کیا کہ یکم نومبر تک ایئر پورٹ پر کام کرنے والی ایئر لائنز سے ماہانہ آپریٹنگ شیڈول کی وصولی کے انتظار میں رواں ہفتے کے دوران ہوائی اڈے کی آپریٹنگ میں کوئی تبدیلی نہیں کی جائے گی جبکہ متعدد پروازوں کی جانب سے نئی منزلوں کے لئے پروازوں کی تعداد بڑھانے کی درخواستیں فی الحال انتظار میں ہیں کیوں سعودی عرب اور دبئی میں ایکسپو دبئی اور ریاض میں جاری تقریبات میں شرکت کے لیے پروازوں کی بھاری مانگ ہے۔ الفداغی نے اشارہ کیا کہ “سول ایوی ایشن” نے آگاہی بڑھانے کے کاموں ، سفری طریقہ کار کو ظاہر کرنے اور ہوائی اڈے کی عمارتوں میں صحت اور احتیاطی تدابیر کو نافذ کرنے کے لیے آپریشن کے لیے ایک سپورٹ اور ایمرجنسی ٹیم تشکیل دی ہے۔

دوسری جانب ذمہ دار ذرائع نے الانباء کو بتایا کہ فلائٹس کا مکمل آپریشن موسم سرما کے شیڈول سے شروع ہوگا جو یکم نومبر سے شروع ہونا ہے اور اگلے مارچ کے آخر تک جاری رہے گا۔ ذرائع نے بتایا کہ “سول ایوی ایشن” نے اگلے مہینے تک ہوائی اڈے کو چلانے کے لیے ایک مربوط منصوبہ تیار کیا ہے تاکہ پاسپورٹ ، سامان کا وزن کرنے اور اسے وصول کرنے والا ایریا یا ویٹنگ ہالز میں بھیڑ کو روکا جاسکے تاکہ کویت بین الاقوامی ہوائی اڈے کی بحالی کےساتھ بتدریجکا کیا جا سکے اس کے علاوہ ہر طیارے اور دوسرے کے درمیان 15 منٹ کا وقت ہو گا تاکہ کورونا ٹیسٹ کی جانچ پڑتال اور “امیونٹی” یا “ھویتی” ایپلی کیشن پر موصول ہونے والی ویکسی نیشن کا جائزہ لینے کے لیے مناسب وقت دیا جا سکے۔

ذرائع:کویت اردو نیوز

اپنا تبصرہ بھیجیں