کویت: تعلیمی قابلیت کے ثبوت کے بغیر ورک پرمٹ کی تجدید ناممکن

تعلیمی سطح کے ثبوت کے بغیر شہریوں اور غیر ملکیوں کے لیے ورک پرمٹ کی تجدید یا اجراء نہیں ہو گا۔

تفصیلات کے مطابق کویت نے پیشہ ورانہ تفصیل کو تعلیمی سطح کے ساتھ جوڑنے میں بڑی پیش رفت کی ہے جو کہ گزشتہ اگست کے آخر تک 1،855 پیشہ ورانہ عنوانات کو تعلیمی سطح کے ساتھ جوڑنے میں کامیاب ہوا۔ روزنامہ القبس کی رپورٹ کے مطابق شہری و غیرملکی ملازمین کی تعلیمی سطح و قابلیت کے ثبوت کے بغیر مطلوبہ ملازم کا عہدہ یا اس کے کام کے اجازت نامے (ورک پرمٹ) کی تجدید نہیں کی جائے گی جب تک کہ اس کا مطلوبہ پیشہ شرائط کے ساتھ موازنہ کرے جو اس پیشے کے لحاظ سے اس ملازم کے عہدے سے مطابقت رکھتا ہو۔ نئے ناموں کی فہرست میں یہ بات قابل ذکر ہے کہ کم از کم ڈپلومہ رکھنے والوں کے لیے ٹیکنیشن ، ٹرینر ، سپروائزر ، شیف ، پینٹر ، ریفری کے نام بتائے گئے ہیں جبکہ آپریٹر کا عہدہ (چاہے وہ مشینری کا آپریٹر ہو یا کسی بھی چیز کا) ان لوگوں میں تقسیم کیا گیا جن کی تعلیم انٹرمیڈیٹ ڈگری یا پرائمری تعلیم سے کم ہے۔ عنوانات کے طور پر ڈائریکٹر ، انجینئر ، ڈاکٹر ، نرس، ماہر موسمیات ، عام طبیعیات دان ، جنرل کیمسٹ ، ارضیات ، استاد ،

ریاضی دان ،اکاؤنٹنٹ، شماریات دان یا میڈیا اور دیگر شعبوں میں خصوصی ملازمتوں کی تعلیمی سطح کا تعین بیچلر ڈگری یا اس کے برابر کیا گیا ہے جبکہ ریسٹورنٹ میں مینیجر، فوڈ اینڈ بیوریج سروس ، ریٹیل سٹور اور ہوٹل کے استقبالیہ کی کم از کم تعلیم انٹرمیڈیٹ رکھی گئی ہے اس کے علاوہ اخبار تقسیم کرنے والے ، مزدور ، کسان ، سیکورٹی گارڈ ، پولٹری بریڈر کے عہدوں کو کم از کم پرائمری تعلیم کے ساتھ جوڑا گیا ہے۔ یہ قابل ذکر ہے کہ پیشوں کو تعلیمی سطحوں سے جوڑنا ملازمت کی درجہ بندی اور ملازمت کی تفصیل کے لیے “افرادی قوت” گائیڈ لائن کو اپنانے کے بعد آیا ہے اور یہ تمام خلیجی ممالک میں عام کیا گیا ہے تاکہ جی سی سی ممالک میں کارکنوں کے درمیان عنوان کو معیاری بنایا جا سکے۔

ذرائع: کویت اردو نیوز

اپنا تبصرہ بھیجیں