پاکستان سول ایوی ایشن نے کویت کی پروازوں کے لئے سخت فیصلہ کر لیا

پاکستان کی قومی ائیرلائن کو بحالی کی اجازت نہ دینے پر پاکستان نے کویت کی پروازوں کو یکم اکتوبر سے محدود کرنے کا فیصلہ کر لیا۔

پاکستانی میڈیا ڈان نیوز کی رپورٹ کے مطابق پاکستان سول ایوی ایشن اتھارٹی (سی اے اے) کی جانب سے کویت کی سول ایوی ایشن اتھارٹی کو بار بار درخواست کرنے کے باوجود پاکستان انٹرنیشنل ایئرلائنز (پی آئی اے) کو کویت سے اپنی پروازیں دوبارہ شروع کرنے کی اجازت نہیں دی گئی جو کہ کوویڈ 19 وبائی امراض کی وجہ سے عرصہ دراز سے معطل تھیں جس کی وجہ سے پاکستان سی اے اے نے کویت کی نامزد کردہ ایئرلائنز (کویت ایئرویز اور جزیرا ایئر ویز) کی پروازوں کو محدود کر دیا ہے جو کہ گزشتہ ماہ سے پاکستان کے لئے اپنی پروازیں چلارہے ہیں۔

پاکستان کی سول ایوی ایشن اتھارٹی نے پیر کو سول ایوی ایشن کویت کے ڈائریکٹر جنرل کو لکھا کہ “اگرچہ ہمارا قومی کیریئر (پی آئی اے) کویت سے آنے اور جانے والی پروازوں پر سختی سے عمل پیرا ہے کویتی سی اے اے نے اس کی منظوری نہیں دی ہے۔” اس میں کہا گیا ہے کہ کویتی حکام پی آئی اے کے کویت سے آنے اور جانے والے فلائٹ آپریشن کی منظوری دے سکتے ہیں خاص طور پر انتہائی سہولت کے پس منظر میں جو کوویڈ 19 وبائی امراض کی وجہ سے درپیش چیلنجوں کے باوجود کویتی ایئرلائنز کو دی گئی ہے تاہم آج تک مطلوبہ منظوری کی عدم موجودگی میں دونوں ریاستوں کے درمیان کمرشل فلائٹ آپریشنز کے حوالے سے تجارتی باہمی تعاون کا دوبارہ جائزہ لیا جانا ہے۔ اس میں کہا گیا ہے کہ پی آئی اے کے کویت سے اور تجارتی باہمی تعاون کے جذبات سے فلائٹ آپریشن کی مزید منظوری نہ ہونے کی صورت میں سی اے اے کو پابند کیا جائے گا کہ وہ کویتی نامزد ایئرلائنز کے فلائٹ آپریشن کے لیے یکم اکتوبر سے کویتی نامزد ایئر لائنز (کویت ایئرویز اور جزیرا ایئرویز) میں سے ہر ایک کی پروازوں کے آپریشن کو محدود کرکے پاکستان کے لیے اسی طرح کی کارروائی شروع کرے۔

ذرائع: کویت اردو نیوز

اپنا تبصرہ بھیجیں