کویت: 60 سالہ غیرملکی افراد کے اقاموں سے متعلق اہم خبر

60 سالہ فیصلے سے متعلقہ افراد کے اقاموں کی تجدید کے لیے کوئی فیس یا استثناء نہیں ہو گی۔

تفصیلات کے مطابق ورک فورس نے ”کاروباری مالکان کو ہدایات جاری کی ہیں کہ جب تک 60 سالہ افراد کے اقاموں کی تجدید کے حوالے سے کوئی دوسرا فیصلہ جاری نہیں ہوتا تب تک محکمے کو ملازمین یا لیبر کے بارے میں کسی بھی تجدید کے لئے درخواست نہ دیں۔ “تجدید پابندی” میں ترمیم کرنا یا منسوخ کرنا وزیر تجارت کے ہاتھ میں ہے اور اتھارٹی اس وقت تک “تجدید کی روک تھام” کرتی رہے گی جب تک اس معاملے کا فیصلہ نہیں ہو جاتا۔ پبلک اتھارٹی برائے افرادی قوت کے ایک سرکاری ذریعہ نے زور دیا کہ اتھارٹی ان لوگوں کے لیے تجدید پر پابندی کے فیصلے پر عملدرآمد جاری رکھے ہوئے ہے جو 60 سال سے ذیادہ عمر کے ہیں اور ان کے پاس ہائی سکول یا اس سے کم درجے کے سرٹیفکیٹ ہیں جبکہ کاروباری مالکان پر زور دیا ہے کہ وہ ورک پرمٹ کی تجدید کے حوالے سے اتھارٹی یا کسی بھی لیبر ڈیپارٹمنٹ کا جائزہ نہ لیں کیونکہ فیس ادا کرنے یا استثناء حاصل کرنا فی الوقت ممکن نہیں کیونکہ اس معاملے سے متعلق کوئی نیا فیصلہ جاری نہیں کیا گیا ہے۔

جلد ہی فیصلے میں ترمیم کرنے کا فیصلہ کرنے کے بارے میں ایک سوال کے جواب میں ذرائع نے بتایا کہ بورڈ آف ڈائریکٹرز نے ترمیم کی منظوری دے دی تھی لیکن فیصلہ وزیر تجارت اور صنعت کے پاس ہے کہ وہ اس فیصلے کو منظور کرے یا اس میں ترمیم کرے اور جب تک کوئی فیصلہ نہیں ہوتا اتھارٹی اس زمرے کی تجدید پر باضابطہ طور پر جاری کردہ فیصلے پر عمل درآمد جاری رکھے گی اور حتمی فیصلہ آنے تک ورک پرمٹ کی تجدید نہیں کی جائے گی۔

ذرائع: کویت اردو نیوز 

اپنا تبصرہ بھیجیں