کویت ائیرپورٹ پر سفری طریقہ کار پر عمل درآمد کے لیے تیاریاں مکمل

یکم اگست سے شروع ہونے والے نئے سفری طریقہ کار پر عمل درآمد کے لیے تیاریاں مکمل کرلی گئیں۔

تفصیلات کے مطابق وزارت صحت کے سرکاری ترجمان ڈاکٹر عبداللہ السناد نے اعلان کیا کہ سفر سے متعلق نئے طریقہ کار کے حوالے سے وزارت کی تیاریاں مکمل کی جاچکی ہیں۔ یکم اگست سے ملک میں داخل ہونے والوں پر نئی شرائط لاگو ہوں گی اور مسافر نئے سفری طریقہ کار پر عمل کرکے ہی ملک میں داخل ہوسکتے ہیں۔ السناد نے تصدیق کی ہے کہ متعلقہ حکام کے ساتھ وزارت کی ہم آہنگی جاری ہے۔ نوٹ کرتے ہوئے کہ وزارت کے متعلقہ شعبوں میں تکنیکی کمیٹیوں کی کوششیں 17 جون کے

کابینہ کے فیصلے کے بعد سے مسلسل جاری ہیں۔ سفارشات اور متعلقہ ہدایات تیار کرنے ، ان کا مطالعہ کرنے اور میکانزم کے حوالے سے ہم آہنگی پیدا کرنے کا مقصد دوسرے ریاستی حکام کے ساتھ میکانزم کو اس طرح سے لاگو کرنا کہ ملک کی صحت کی حفاظت کی جاسکے۔

انہوں نے وضاحت کی کہ نئے طریقہ کار کو نافذ کرنے کی تیاری میں وزارت نے ٹیکنیکل کمیٹی کی تشکیل آغاز میں ہی کردی تھی جو کہ ملک سے باہر ویکسین لگانے والوں کے سرٹیفکیٹ کی تصدیق کرتی ہے۔ کمیٹی نے کچھ عرصہ قبل اپنی ذمہ داریوں کو انجام دینا شروع کیا تھا۔ یہ کمیٹی بیرون ملک ویکسین لگوانے والوں کے سرٹیفکیٹ کی منظوری اور جانچ پڑتال کرنے میں مہارت رکھتا ہے۔

ڈاکٹر السناد نے اشارہ کیا کہ جو لوگ ملک میں آرہے ہیں وہ اپنے ویکسی نیشن سرٹیفکیٹ کو وزارت کی ویب سائٹ پر اپ لوڈ کریں اور اس حوالے سے تصدیق کا انتظار کریں۔ اس بات کی نشاندہی کرتے ہوئے کہ QR کوڈ فیچر کے ذریعے آمد پر ویکسی نیشن کا حصول ثابت کرنا بھی ضروری ہے۔

انہوں نے متعلقہ حکام کے ساتھ صحت کے طریقہ کار کے حوالے سے اعلی سطحی تعاون اور ہم آہنگی کی تعریف بھی کی۔ مسافروں کے لیے ضروری ہے کہ ان کے پاس پی سی آر کا منفی سرٹیفکیٹ ہو جس سے یہ ثابت ہو کہ وہ کورونا وائرس سے پاک ہے۔ سرٹیفکیٹ (72 گھنٹے) قبل کا ہو اور یہ کہ مسافر درجہ حرارت ، چھینک ، ناک بہنا ، کھانسی اور دیگر علامات ظاہر نہ کرے۔

ذرائع: کویت اردو نیوز

اپنا تبصرہ بھیجیں