کویت داخلے کے لیے تیسرے ملک میں 14 دن کا قرنطین ختم کرنے کا اعلان

بغیر کسی براہ راست پروازوں والے ممالک سے آنے والے تارکین وطن کے لئے 14 دن ٹرانزٹ ملک میں قیام کی ضرورت نہیں۔

تفصیلات کے مطابق غیرملکیوں کو ملک میں داخلے کی اجازت دینے کے کابینہ کے فیصلوں کے اطلاق کے ساتھ کچھ سفری شرائط میں تبدیلی بھی منظر عام پر آئی ہے جس میں مسافروں کو اب کسی تیسرے ملک میں 14 دن تک قرنطین کرنے کی ضرورت نہیں ہے۔ تارکین وطن کو داخلے کی اجازت دینے سے متعلق کابینہ کے فیصلے کے تحت ایسے ممالک سے آنے والے افراد کے لئے جو براہ راست تجارتی پروازیں نہیں کرتے ہیں 14 دن تک ٹرانزٹ اسٹیشن میں رہنے کی ضرورت کو منسوخ کردیا گیا ہے۔ باخبر ذرائع نے روزنامہ کو بتایا کہ16 سال سے کم عمر بچوں کو ویکسین کی شرط سے استثنیٰ حاصل ہے۔ یکم اگست سے کویت پہنچنے سے قبل یا بیرونِ ملک سفر سے قبل بچوں کے لئے ویکسین کی شرط نہیں ہے۔ وزراء کی کونسل کی ہدایات پر عمل درآمد کے دوران غیر ویکسین شدہ ملازمین کو وزارتوں ، سرکاری اداروں اور نجی شعبے میں کام جاری رکھنے کی اجازت ہوگی۔

یاد رہے کہ کویت داخلے کے لیے پاکستان ، بھارت ، سری لنکا ، بنگلہ دیش اور نیپال سے آنے والی تمام قسم کی پروازوں کو 10 اگست تک معطل کردیا گیا ہے۔ مذکورہ بالا فیصلے کے مطابق اگر 10 اگست کے بعد ان 5 ممالک کی کویت کے لئے براہ راست پروازوں کی بجائے ٹرانزٹ پروازیں بحال کی جاتی ہیں تو ان ممالک سے آنے والے تارکین وطن کو کسی تیسرے ملک میں 14 تک کا قرنطین گزارنے کی ضرورت پیش نہیں آئے گی۔

ذرائع: کویت اردو نیوز

اپنا تبصرہ بھیجیں