کویت نے پاکستان اور بھارت سمیت 5 ممالک کی براہ راست پروازیں منسوخ کردیں

پاکستان ، بھارت ، سری لنکا ، بنگلہ دیش اور نیپال سے کویت کے لئے براہ راست پروازیں 10 اگست تک منسوخ کردی گئیں۔

تفصیلات کے مطابق کویت ڈائریکٹوریٹ جنرل آف سول ایوی ایشن DGCA نے ایئر لائنز کو جاری کیے گئے ایک نئے سرکلر میں 5 ممالک سے براہ راست پروازیں اور منسلک پروازیں منسوخ کردی ہیں جس میں پاکستان ، ہندوستان ، سری لنکا ، بنگلہ دیش اور نیپال شامل ہیں۔ ایئر لائنز کے ذریعہ جاری کردہ معلومات کے مطابق تمام بکنگ منسوخ کردی گئی ہیں۔ ان ممالک سے واپس آنے والے مسافروں کے لئے کچھ ایئر لائنز نے بکنگ شروع کردی تھی تاہم اب ان 5 ممالک سے براہ راست پرواز کرنے والے مسافروں کے لئے 10 اگست 2021 تک بکنگ منسوخ کردی ہے اور مزید بکنگ روک دی گئی ہیں۔

تاہم DGCA نے کابینہ کے اس فیصلے پر عمل درآمد کیا ہے جس میں جائز رہائشی اقاموں کے ساتھ کویت میں داخل ہونے کی اجازت دی گئی ہے اور کہا گیا ہے کہ انہیں 14 دن تک کسی تیسرے ملک میں قرنطین کرنے کی ضرورت نہیں ہے۔

تارکین وطن کو داخلے کی اجازت دینے سے متعلق کابینہ کے فیصلے کے تحت ایسے ممالک سے آنے والے افراد کے لئے جو براہ راست تجارتی پروازوں سے ملک میں داخل نہیں ہوسکتے ان کے لئے 14 دن تک ٹرانزٹ اسٹیشن میں رہنے کی شرط کو منسوخ کردیا گیا ہے تاہم کویت ائیرپورٹ آنے والے تمام مسافروں کو چار شرائط کو پورا کرنا ہوگا جو کہ مندرجہ ذیل ہیں:

درست رہائشی اقامہ اور منظور شدہ ویکسین میں سے ایک ویکسین کی دو خوراکیں وصول کرنا۔ پرواز کی تاریخ سے 72 گھنٹے پہلے کا PCR ٹیسٹ فراہم کرنا۔ گھریلو قرنطین کے پہلے 3 دن کے دوران ایک اور ٹیسٹ کروانا اور نتیجہ منفی آنے کی صورت میں قرنطین کی شرط ختم ہوجائے گی۔

جہاں تک گھریلو ملازمین کی بات ہے کویتی خاندانوں کی حفاظت اور صحت کو یقینی بنانے کے لئے ادارہ جاتی قرنطین کی ضرورت ہے۔ باخبر ذرائع نے روزنامہ الانباء کو بتایا کہ 16 سال سے کم عمر کو ویکسین کی ضرورت نہیں۔ یکم اگست سے کویت پہنچنے سے قبل غیر ملکیوں کے بچوں اور بیرون ملک سفر کرتے وقت کویتی بچوں کو ویکسین حاصل کرنے کی شرط سے استثنیٰ حاصل ہے۔

ذرائع: کویت اردو نیوز

اپنا تبصرہ بھیجیں