کویت واپس آنے والے غیرملکیوں پر ہوٹل قرنطینہ کی شرط عائد ہونے کے امکانات

کورونا وائرس سے متاثرہ زیادہ خطرے والے ممالک سے آنے والے تارکین وطن کے لئے ممکنہ طور پر ادارہ جاتی ہوٹل قرنطینہ کی شرط عائد ہوسکتی ہے۔

تفصیلات کے مطابق سول ایوی ایشن کے ڈائریکٹریٹ جنرل وزراء کونسل کی ہدایت کے منتظر ہیں کہ وہ اگست سے تارکین وطن کے لئے داخلے کے طریقہ کار کی وضاحت کریں کیونکہ کویت واپس آنے والے زیادہ تر مسافروں کا تعلق مصر ، ہندوستان ، پاکستان اور دیگر ممالک سمیت زیادہ خطرہ والے ممالک سے ہے۔ وزراء کونسل کے میکانزم میں زیادہ خطرے والے ممالک سے کویت آنے والے تمام افراد کے لئے ادارہ جاتی قرنطین (ہوٹل قرنطین) شامل ہوسکتا ہے فی الحال کابینہ کے فیصلے سے ملک میں

تارکینِ وطن کو واپسی کی اجازت مل گئی ہے تاہم وہ کویت میں منظور شدہ ویکسین کی دو خوراکیں وصول کرکے اور سفر سے 72 گھنٹے قبل PCR ٹیسٹ کی منفی رپورٹ بیرون ملک مخصوص لیبارٹریوں سے حاصل کرکے پیش کرنے کی صورت میں ہی ملک میں داخل ہوسکتے ہیں۔ روزنامہ الانباء کے مطابق” کویت مسافر” پلیٹ فارم میں 47 سے زیادہ ہوٹلوں کو شامل کیا گیا ہے۔ کرونا سرٹیفکیٹ کی جعلسازی اور پی سی آر سرٹیفکیٹ کے لئے وزارت صحت اور ڈائریکٹر جنرل برائے سول ایوی کے ذریعہ کویت ائیرپورٹ پر سخت طریقہ کار اور پروٹوکول نافذ کیے گئے ہیں تاکہ غیرقانونی طریقوں کو روکا جاسکے۔ وزارت نے تصدیق کی کہ

مقامی سرکاری پلیٹ فارمز پر منظوری اور تصدیق سے قبل ویکسی نیشن کے سرٹیفکیٹ کا جائزہ لینے اور جانچ کرنے کے لئے ایک خصوصی تکنیکی ٹیم تشکیل دی گئی ہے۔ تکنیکی ٹیم کویتی شہریوں کے بیرون ملک جاری ویکسی نیشن کے دستاویزات اور سرٹیفکیٹس جو مندرجہ ذیل ویب سائٹ پر اپلوڈ کئے جاتے ہیں کی جانچ پڑتال کرتی ہے۔ (https://vaxcert.moh.gov.kw/SPCMS/PH/CVD_19_Vaccine_Extern_RegmissionModify.aspx تاکہ ان دستاویزات کی تصدیق کو یقینی بنایا جاسکے۔ سرٹیفکیٹ کی جانچ پڑتال کے بعد متعلقہ شخص کو منظوری یا اس کے دستاویزات کے طریقہ کار کو مکمل کرنے کے لئے پیغام ارسال کیا جاتا ہے۔

اپنا تبصرہ بھیجیں