کویت واپسی کے لئے فی الحال منظور شدہ ویکسین ہی قابل قبول ہو گی

کویت کی جانب سے غیر منظور شدہ ویکسین لگوانے والوں کے لئے فی الحال کوئی چھوٹ نہیں، صرف منظور شدہ ویکسین ہی قابل قبول ہو گی: ذرائع

تفصیلات کے مطابق کورونا سپریم کمیٹی کے قریبی ذرائع نے بتایا کہ وزارت انصاف کے کچھ شعبوں میں ملازمین کے اوقات کار کو 100 فیصد منظور کرنے سے کمپلیکس ، ریسٹوران اور کیفے کھولنے کے لئے وقت کی مدت میں 10 بجے تک اضافے کا فیصلہ جاری کرنے پر غور و فکر کیا جارہا ہے۔ ذرائع نے واضح کیا کہ یہ فیصلہ شہریوں اور رہائشیوں کے ایک بڑے طبقے کے رابطے کی وجہ سے متوقع ہے جن کے لئے یہ معاش کا واحد ذریعہ ہے جس میں توسیع کی تاریخ کے فوری عزم کا مطالبہ کیا گیا ہے۔

سرکاری ذرائع نے روزنامہ الانباء کو خصوصی بیان دیتے ہوئے اس بات کی بھی تصدیق کی کہ سول ایوی ایشن کی جنرل انتظامیہ کو ابھی تک غیر منظور شدہ کورونا ویکسین وصول کرنے والوں (جنہوں نے بیرون ملک سے کویت واپسی سے قبل ویکسین وصول کیا ہو) کو کسی قسم کی چھوٹ کی اجازت کے بارے میں نہیں بتایا گیا ہے۔ ملک میں واپسی صرف کویت میں منظور شدہ چار ویکسینوں کے وصول کنندہ تک محدود ہے۔

غیر منظور شدہ ویکسین لینے والوں کے لئے کوئی حل تلاش کرنے کے امکان کے بارے میں ایک سوال کے جواب میں ذرائع نے جواب دیا کہ ان کا معاملہ کورونا ہنگامی صورتحال کے لئے کورونا سپریم کمیٹی کو بھیج دیا جائے گا اور پھر سول ایوی ایشن کی جنرل ایڈمنسٹریشن کو مطلع کیا جائے گا تاہم فی الوقت سرکاری طور پر منظور شدہ ویکسین 4 ہی ہیں جن میں فائزر بایونٹیک، آسٹرا زینیکا آکسفورڈ، موڈرنا اور جانسن اینڈ جانسن شامل ہیں۔

ذرائع: الانباء ۔ کویت اردو نیوز

اپنا تبصرہ بھیجیں