متحدہ عرب امارات: دبئی میں معمولات زندگی مخصوص شرائط پر بحال کر دی گئی

دبئی کی بحران اور ڈیزاسٹر مینجمنٹ کی سپریم کمیٹی نے شادی بیاہ کی تقریبات کے اہتمام کی اجازت دے دی

تفصیلات کے مطابق دبئی میں بحران اور ڈیزاسٹر مینجمنٹ کی سپریم کمیٹی نے دبئی میں تقریبات اور مختلف سرگرمیوں کے لئے احتیاطی تدابیر کی تازہ کاریوں کی منظوری دے دی ہے۔ امارت میں احتیاطی تدابیر کی تازہ کاریوں کا اطلاق آج (17 مئی) سے کر دیا گیا جبکہ دو میٹر کے فاصلے تک سماجی فاصلے اور ماسک پہننے کی پابندی عائد کرتے ہوئے اس پر عمل کرنے کی ضرورت پر بھی زور دیا ہے۔

احتیاطی تدابیر کی پاسداری کرتے ہوئے زیادہ سے زیادہ 100 افراد پر مشتمل شادیوں کی تقریبات کو ہوٹلوں اور شادی ہالوں میں منعقد کرنے کی اجازت دی گئی ہے بشرطیکہ تمام شرکاء اور کارکنان کوویڈ 19 ویکسین وصول کرچکے ہوں تاہم گھروں میں منعقد شادیوں میں صرف 30 افراد ہی شریک ہوسکتے ہیں بشرطیکہ تمام شرکاء اور گھریلو ملازمین ویکسینیٹ شدہ ہوں۔

کنسرٹ ، سماجی اور ادارہ جاتی تقریبات اور بڑے پیمانے پر کھیلوں کے پروگراموں کے لئے الیکٹرانک پرمٹ کی درخواستیں پیش کرنے کی بھی اجازت دی گئی ہے بشرطیکہ تمام شرکاء کوویڈ 19 ویکسین حاصل کرچکے ہوں۔

تازہ کاریوں میں یہ بتایا گیا ہے کہ کھیلوں میں شرکت کی جگہوں پر بند جگہوں کے لئے زیادہ سے زیادہ 1500 شائقین اور کھلی جگہوں کے لئے 2500 افراد کی تعداد ہونی چاہئے جبکہ تمام شرکاء احتیاطی تدابیر پر عمل پیرا ہوں۔ ریستورانوں میں ایک ہی میز پر نشستوں کی تعداد میں زیادہ سے زیادہ 10 افراد جبکہ کیفے کے لئے 6 افراد کی گنجائش ہوگی۔

تفریحی سرگرمیوں اور سروسز کی گنجائش 70 فیصد اور ہوٹل کے کمروں کو 100 فیصد تک بڑھا دیا گیا ہے۔ معاشرتی کھیلوں کے مقابلوں میں شرکت کے لئے عوام شریک ہوسکتے ہیں بشرطیکہ تمام شرکاء کوویڈ 19 ویکسین وصول کرچکے ہوں۔

ذرائع: کویت اردو نیوز

اپنا تبصرہ بھیجیں