سول انفارمیشن برائے پبلک اتھارٹی نے “My Identity” ایپلی کیشن میں خصوصی فیچر شامل کردیا

سول انفارمیشن برائے پبلک اتھارٹی نے “My Identity” ایپلی کیشن میں خصوصی فیچر شامل کردیا ہے۔

تفصیلات کے مطابق سول انفارمیشن برائے پبلک اتھارٹی نے My Identity ایپلی کیشن جسے “ہویتی” بھی کہا جاتا ہے کو اپڈیٹ کرتے ہوئے موجودہ صورتحال کے پیش نظر نیا فیچر شامل کردیا ہے۔ اس فیچر میں صارفین کی ویکسی نیشن اپڈیٹ شامل کی جائے گی۔

سول انفارمیشن برائے پبلک اتھارٹی نے اعلان کیا کہ اس نے My Identity ایپلی کیشن کے لئے ایک نئی اپڈیٹ کا آغاز کیا ہے جس میں کچھ اہم ترامیم بھی شامل کی گئی ہیں۔ اس کی سب سے اہم اپڈیٹ میں کوویڈ 19 کے لئے ویکسی نیشن کے اعداد و شمار کو ظاہر کرنے اور اپ ڈیٹ کرنے کے ڈیجیٹل آئی ڈی میں خصوصی فیچر شامل کیا گیا ہے۔

اتھارٹی نے گذشتہ روز جمعہ کو ایک بیان میں کہا ہے کہ یہ اپڈیٹ وزارتِ برائے کام وزیر مملکت برائے مواصلات اور انفارمیشن ٹکنالوجی ، سول انفارمیشن پبلک اتھارٹی کے بورڈ آف ڈائریکٹرز کی چیئرمین ڈاکٹر رنا الفارس اور مساعد العسوسی کی وزارت صحت کے ساتھ باہمی ہم آہنگی اور مشترکہ
کوششوں کے نتیجے میں سامنے آئی ہے۔

اس سلسلے میں اتھارٹی کے ڈائریکٹر جنرل مساعد العسوسی نے ایک بیان میں کہا ہے کہ اتھارٹی نے My Identity کے اطلاق کے لئے اس نئی اپڈیٹ کا آغاز کیا اور بہت سی سروسز کو شامل کیا جس میں سب سے اہم ویکسی نیشن کی توثیق اور معلومات شامل ہیں ۔

ڈیجیٹل آئی کی ایپلی کیشن My Identity میں تازہ اپڈیٹ کچھ یوں ہوں ہیں:

ایپلی کیشن میں ڈیجیٹل شناختی ڈیٹا کیلئے خودکار اپڈیٹ کی خصوصیت شامل کی گئی ہے۔
آسانی سے تصدیق کی سطح کو اپ گریڈ کرنا اور الیکٹرانک تصدیق کو شروع کرنا۔
ایپلی کیشن میں پیشے کے حقوق اور رہائش کے حقوق شامل کرنا۔
خود کار طریقے سے OTP کوڈ کا اندراج۔
مساعد العسوسی نے بتایا کہ My Identity ایپلی کیشن کی نئی اپڈیٹ جسے پبلک اتھارٹی برائے سول انفارمیشن نے گزشتہ روز لانچ کیا ہے تمام سمارٹ ڈیوائس سسٹم (Android, IOS, Huawei) پر کام کرتی ہے اور ایپلی کیشن کو اپ ڈیٹ کرنے اور دوبارہ داخل ہونے پر ویکسی نیشن کا تمام ڈیٹا براہ راست ظاہر ہوجاتا ہے۔

قابل ذکر ہے بات یہ ہے کہ My Identity ایپلی کیشن کو شناخت اور پروسیسنگ کے لین دین کے معاملات میں ڈیجیٹل سول کارڈ کی حیثیت سے وزراء کی کونسل کے فیصلے کے مطابق منظور کیا گیا تھا اور اب تک اس کے استعمال کرنے والوں کی تعداد 1.7 ملین سے تجاوز کر چکی ہے۔

ذرائع: الانباء۔کویت اردو نیوز

اپنا تبصرہ بھیجیں