قرنطین کی مدت 7 دن ہونے کا امکان

قرنطین سے متعلق بڑا فیصلہ متوقع، صحت حکام کی جانب سے قرنطین کی مدت کو کم کئے جانے پر غور۔

تفصیلات کے مطابق روزنامہ القبس نے اپنی رپورٹ میں انکشاف کیا کہ صحت کے حکام ملک آنے والے افراد کے لئے گھریلو قرنطین کو صرف ایک ہفتہ تک کم کرنے پر غور کر رہے ہیں بشرطیکہ مسافر کورونا وائرس سے پاک ہو اور کورونا سرٹیفکیٹ پر ٹیسٹ کا نتیجہ منفی لکھا ہو۔ رپورٹ میں واضح ہے کہ قرنطین کی مدت کو کم کرنے کے فیصلے کا اطلاق ایئر لائنز کی پی سی آر ٹیسٹ لینے کے فیصلے سے مشروط ہے۔

ذرائع نے بتایا کہ وزراء کی کونسل کے جاری کردہ فیصلے میں یہ بتایا گیا ہے کہ مسافر پی سی آر کے دو ٹیسٹ کروائینگے، پہلا کویت بین الاقوامی ہوائی اڈے پر آمد کے دوران اور دوسرا “قرنطین” کی مدت کے دوران جس کے لئے کوئی مخصوص دن متعین نہیں کیا گیا ہے تاہم جلد ہی اس کا فیصلہ بھی کیا جائے گا۔

ذرائع کے مطابق کابینہ کے فیصلے کا ابتدائی تاثر یہ ہی ہے کہ آنے والوں کا قرنطین چودہ دن کی بجائے کم کرکے ایک ہفتہ کردیا جائے تاہم ائیر لائنز کے پی سی آر ٹیسٹ کے آغاز کے ساتھ آنے والے مسافروں کو تین پی سی آر ٹیسٹ سے گزرنا ہوگا اور توقع ہے کہ قرنطین کے ساتویں دن مسافر کا پی سی آر ٹیسٹ لیا جائے گا۔ ٹیسٹ کی رپورٹ منفی آنے کی صورت میں 7 دن کا گھریلو قرنطین کافی ہوگا جبکہ رپورٹ مثبت آنے کی صورت میں قرنطین 14 دن پورا کرنا ہوگا۔

ایک باخبر ذرائع نے ایئر لائنز کے آنے پر پی سی آر ٹیسٹ کے اخراجات اور ملک میں آنے والے تمام افراد کے لئے قرنطین مدت کے دوران قیمت وصول کرنے کے فیصلے کو ملتوی کرنے کی وجوہات کا انکشاف کیا چونکہ کویت بین الاقوامی ہوائی اڈے پر انفراسٹرکچر کو اعلیٰ نوعیت تکنیکی اور لاجسٹک تیاری کی ضرورت ہے کیونکہ اس سے قبل پی سی آر ٹیسٹ ملک میں آنے والی ہر پرواز کے لئے 10 فیصد کی شرح سے کیا جاتا تھا لیکن اب اس کا اطلاق ہر ایک پر ہوگا اور اسی وجہ سے ہوائی اڈے کے ٹرمینلزT5 T1 ، T3 ، T4 میں اضافی سروسس کی ضرورت ہے تاکہ تمام مسافروں کا ٹیسٹ کیا جاسکے اور ٹیسٹ کے دوران ائیرپورٹ پر مسافروں کا رش نہ ہو نیز نہ ہی مسافروں کو پی سی آر ٹیسٹ کے لئے گھنٹوں انتظار کرنا پڑے۔

ذرائع نے بتایا کہ ہوائی اڈے پر کام کرنے والے آلات ایک مشترکہ الیکٹرانک پلیٹ فارم بنانے کے عمل میں ہیں تاکہ گراؤنڈ سروس فراہم کرنے والے تسلیم شدہ لیبارٹریوں اور وزارت صحت کے مابین خود بخود رابطہ کرکے پی سی آر ٹیسٹ کے طریقہ کار کو آسان بنا کر مسافروں کے لئے طریقہ کار میں آسانی پیدا کی جا سکے۔

ذریعہ نے اشارہ کیا کہ یہ قدم اس بات کے لئے اٹھایا جارہا ہے کہ تمام مسافروں کی خود بخود رابطے کے ذریعہ ملک میں آمد کے دوران ہموار طریقے سے پیروی کی جاسکے نیز مسافروں کو پلیٹ فارم کے ذریعے صحت کی تمام ضروریات کو جاننے میں آسانی ہو اور وہ گھریلو قرنطین کی مدت کے دوران ہدایات کی پیروی کرسکیں۔

بحوالہ: القبس ۔ کویت اردو نیوز

اپنا تبصرہ بھیجیں