پارٹ ٹاٸم گھریلو ملازمین کرونا کے پھیلاٶ کا موجب بن سکتے ہیں، وزارتِ صحت

غیر قانونی دفاتر سے پارٹ ٹائم گھریلو ملازمین کرونا کے پھیلاٶ کا سبب بن رہے ہیں۔ یہ ملازمین ایک گھنٹہ کی بنیاد پر کٸی خاندانوں کے لئے کام کرتے ہیں اور اس طرح سے وائرل انفیکشن کے پھیلاٶ کا خطرہ بڑھ جاتا ہے۔ یہ بھی دیکھا گیا ہے کہ گھریلو ملازمین اکثر اپنی صحت کا خیال کیے بنا کام کرتے ہیں۔

ایسے گھریلو ملازمین جو ایک ہی گھر میں کام کرتے ہیں اور ان کی صحت کی جانچ پڑتال بھی ہوتی ہے، کرونا کے پھیلاٶ کا سبب بھی کم ہی بنتے ہیں۔

صحت کے ذرائع نے الرائ کو بتایا کہ کویت کے متعدد خاندان غیر قانونی دفاتر سے عارضی گھریلو ملازمین کی خدمات حاصل کررہے ہیں۔ زراٸع نے انتباہ کرتے ہوۓ کہا کہ کسی ملازم کے کرونا کا شکار ہونے کی صورت میں وبا تیزی سے پھیلنے کا خطرہ ہے۔


وزارت صحت نے اس بات پر زور دیا ہے کہ گھریلو ملازمین مکمل طبی معائنے کرواتے ہیں تاکہ یہ یقینی بنایا جاسکے کہ وہ انفکشن سے پاک ہیں۔ تاکہ کویتی خاندانوں کا تحفظ ہو سکے۔

صحت کے ذرائع نے عوام سے مطالبہ کیا ہے کہ وہ غیر قانونی گھریلو ملازمین سے احتیاط برتیں اور اپنی صحت و حفاظت پر سمجھوتا نہ کریں۔

بحوالہ : دی ٹاٸمز

اپنا تبصرہ بھیجیں