34 ممالک سے غیر ملکیوں کی آمد کے متعلق تجاویز پر غور کرنے کا وعدہ، وزارتِ صحت

وزیر صحت نے 34 ممالک سے غیر ملکیوں کی آمد کے متعلق تجاویز پر غور کرنے کا وعدہ کیا۔

کویت ایئرویز نے بتایا کہ وزیر صحت، ڈاکٹر باسل الصباح ، نے آج کویت ایئرویز اور جزیرا ایئر ویز کے نمائندوں سے ملاقات کی، جس میں دونوں کمپنیوں کی جانب سے پابندی میں درج ممالک سے براہ راست کویت آنے والے مسافروں کے لئے منظور شدہ صحت کے اقدامات سے متعلق پیش کردہ تجویز پر تبادلہ خیال کیا گیا۔

انہوں نے اس سلسلے میں عمل درآمد کے طریقہ کار کی وضاحت کے مطابق اپنا مکمل تعاون اور فہم کا مظاہرہ کیا جس کے باعث اِن سے سے مثبت ردعمل کی توقع کی جاسکتی ہے۔ انہوں نے یہ بھی یقین دہانی کرائی کہ تجویز کردہ اقدامات کی کامیابی کے لیے وزارت صحت کے تکنیکی عملے کے ذریعہ اس تجویز کا ہر طرف سے مطالعہ کیا جائے گا۔

کویت ایئر ویز، وزارت صحت کی تکنیکی رائے پر اپنے مکمل اعتماد کی تصدیق کرتی ہے، جو یقینی طور پر وطن اور شہریوں کے مفاد کے مطابق ہوگی۔ اور اس کے ساتھ ہی وزیر اور تمام طبی اور انتظامی عملہ کی جانب سے کی جانے والی مخلصانہ کاوشوں کے لئے ان کا خصوصی شکریہ پیش کرتی ہے۔

ذرائع نے بتایا ہے کہ تارکین وطن جن کے پاس منظور کردہ رہائش ہے صرف وہ براہ راست پروازوں کے ذریعے واپس آسکتے ہیں، اس کا مطلب ہے کہ غیر ملکی جن کی موجودہ ملازمت، آمدنی کا ذریعہ اور مناسب جگہ ہے وہ گھر میں آٸیسولیٹ کر دیے جائیں گے۔

گھر میں آٸیسولیٹ ہونا تمام آنے والوں کے لئے پہلا آپشن ہے لیکن اگر آنے والے افراد کسی مناسب جگہ کی دستیابی کا ثبوت فراہم نہیں کرتے ہیں تو وہ لازمی طور پر قرنطین ہونے کے پابند ہوں گے اور قرنطینیہ کی مدت کے اختتام تک تمام اخراجات بھی برداشت کریں گے۔

ریاست مسافروں کے ٹیسٹ یا قرنطینیہ کے اخراجات برداشت نہیں کرے گی۔
ابھی تک اس منصوبے پر عمل درآمد کی تاریخ کا تعین نہیں کیا گیا ہے، کیوں کہ فیصلہ اُن فریقین کے مابین ہونا ہے جو صحت حکام کے ذریعہ طے شدہ طریقہ کار کے مطابق آنے والوں کی نگرانی کریں گی۔

ذرائع نے بتایا ہے کہ مسافروں کی آمد کے بعد معائنے کی سہولیات کے سلسلے میں ، کویت بین الاقوامی ہوائی اڈ ہ کے ٹرمینل پر آنے والے ہر مسافر سے سویب (swab) ٹیسٹ لیا جاۓ ، مسافروں سے پی سی آر جانچ کے لئے مسافروں کا ڈیٹا ریکارڈ کیا جاۓ گا اور سویب کے نمونے جمع کیے جاٸیں گے۔
اس طرح ، T1 ،T4 اور T5 میں، مسافروں کے لئے تین معائنہ کے مراکز موجود ہوں گے۔

آپریشن ڈیپارٹمنٹ منظور شدہ مراکز اور ایئر لائنز کے ساتھ ہم آہنگی کا ذمہ دار ہے تاکہ تمام ضروری اعداد و شمار کو حاصل کیا جا سکے۔
وزارت صحت کے ذریعہ کسی بھی منظور شدہ لیبارٹری کے ساتھ مشترکہ یا الگ معاہدہ کیا جاسکتا ہے تاکہ پی سی آر ٹیسٹ کروائے جا سکیں۔

اپنا تبصرہ بھیجیں