کن ممالک سے آنے والے مسافروں کو PCR ٹیسٹ رپوٹ دکھانا ہوگی،پاکستان سول ایوی ایشن کی فہرست جاری

پاکستان کی سول ایوی ایشن نے دُنیا بھر کی بین الاقوامی اور چارٹرڈ پروازوں کے لیے نئے قواعد و ضوابط کا اعلان کر دیا ہے جن کا اطلاق 5اکتوبر 2020ء سے 31 دسمبر 2020ء تک کے لیے ہو گا۔ کورونا سے متعلق نئے ایس او پیز کے تحت رسک اسیسمنٹ کے لیے دُنیا بھر کے ممالک کو 2 کیٹگریز میں تقسیم کر دیا گیا ہے۔ کیٹگری A میں شامل ممالک کے مسافروں کو پاکستان آنے کے لیے پی سی آر ٹیسٹ کروانے کی ضرورت نہیں ہو گی۔ ان ممالک میں آسٹریلیا، کینیڈا، چین، سنگاپور، جرمنی اور جاپان سمیت 38 ممالک شامل ہیں۔

جبکہ کیٹگری B میں ممالک سے آنے والے افراد کے لیے پاکستانی ایئرپورٹس پر کورونا نیگٹو پی سی آر ٹیسٹ دکھانا لازمی ہوگا۔ پاکستان پہنچنے والے تمام مسافر اپنے موبائل میں پاس ٹریک نامی موبائل ایپ ڈاؤن لوڈ کرنے کے پابند ہوں گے۔ اس ایپ میں اپنی ذاتی تفصیلات درج کیے بغیر انہیں ایئرپورٹ پر بورڈنگ پاس نہیں دیا جائے گا۔ ایپ میں ذاتی تفصیلات درج کرنے کے بعد اس کا ایک پرنٹ آؤٹ لے کر ایئرپورٹ کے عملہ کو دینا ہو گا، جس کے بعد مسافر کو بورڈنگ پاس جاری کیا جائے گا۔

جبکہ کیٹگری B میں ممالک سے آنے والے افراد کے لیے پاکستانی ایئرپورٹس پر کورونا نیگٹو پی سی آر ٹیسٹ دکھانا لازمی ہوگا۔ پاکستان پہنچنے والے تمام مسافر اپنے موبائل میں پاس ٹریک نامی موبائل ایپ ڈاؤن لوڈ کرنے کے پابند ہوں گے۔ اس ایپ میں اپنی ذاتی تفصیلات درج کیے بغیر انہیں ایئرپورٹ پر بورڈنگ پاس نہیں دیا جائے گا۔ ایپ میں ذاتی تفصیلات درج کرنے کے بعد اس کا ایک پرنٹ آؤٹ لے کر ایئرپورٹ کے عملہ کو دینا ہو گا، جس کے بعد مسافر کو بورڈنگ پاس جاری کیا جائے گا۔

اپنا تبصرہ بھیجیں