احمدی ٹریفک ڈیپارٹمنٹ میں بنگلہ دیشی اور ایک ملازم نے غیر ملکیوں سے 30 لاکھ کویتی دینار رشوت سے کمائے

وزارت داخلہ نے کویتیوں اور غیر ملکیوں کے لئے اپنی گاڑیوں کی جانچ کے لئے ان کے معائنہ کرنے کی ضرورت کے بغیر گاڑیوں کے رجسٹریشن کی تجدید کے لئے اپنے دروازے کھول دیئے لیکن بارکوڈ جاری ہونے والی ویب سائٹ کے ذریعے پہلے سے وقت لینے کی ضرورت تھی۔

اپنی کار رجسٹریشن کی تجدید کی خواہش کے ساتھ بڑی تعداد میں رش دیکھ کر ایک بنگلہ دیشی میں لالچ پیدا ہوا جس نے اس صورتحال سے فائدہ اٹھایا۔ 20کویتی دینار کی رشوت کے لئے محکمہ احمدی ٹریفک کے ملازم کی شراکت میں پیشگی وقت کے بغیر کار رجسٹریشن کی تجدید اب ممکن تھی۔

سیکیورٹی ذرائع نے بتایا کہ اس معاملے کی تفتیش اس وقت شروع ہوئی جب پتہ چلا کہ احمدی ٹریفک ڈیپارٹمنٹ میں کام کرنے والے “صدام حسین” کے نام سے ایک بنگلہ دیشی شہری بغیر کسی پیشگی وقت کی ضرورت کے گاڑی کے اندراج اور کسی خاص ٹرانزیکشن کی تجدید کرسکتا ہے۔

بحوالہ : عرب ٹائمزکویت

اپنا تبصرہ بھیجیں